48

صدر مملکت نے فنانس ضمنی بل 2022 کی منظوری دے دی

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے فنانس ضمنی بل 2022 کی منظوری دے دی۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے فنانس ضمنی بل 2022 پر دستخط کر دئیے ہیں۔ 13 جنوری کو وزیر خزانہ شوکت ترین نے فنانس ضمنی بل 2022 کو ایوان میں پیش کیا تھا جسے قومی اسمبلی نے کثرت رائے سے منظور کر لیا تھا۔

صدر مملکت عارف علوی نے آئین کے آرٹیکل 75 کے تحت بل کی منظوری دی جس کے بعد فنانس ضمنی بل ایکٹ بن گیا ہے۔ اس کے علاوہ قومی اسمبلی نے اسٹیٹ بینک ترمیمی بل 2022 کثرت رائے سے منظور کیا تھا، اپوزیشن نے بل کی منظوری ‏کے خلاف اسپیکر ڈائس کا گھیراؤ کیا اور بل کی کاپیاں ہوا میں اچھال کر اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت نے 3 سال میں بنیادی اصلاحات کی ہیں، حماد اظہر

اپوزیشن نے فنانس ضمنی بل کو آئی ایم ایف کی غلامی کرنے سے تعبیر کیا تھا جبکہ اہم قانون سازی پر وزیر اعظم عمران خان نے وزیرخزانہ شوکت ترین کو شاباش دی تھی۔

وزیر اعظم نے شوکت ترین کو ‏اپنی نشست پر بلایا اور بلز کی منظوری میں کامیابی پر ان کی کارکردگی پر خوشی کا اظہار کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں