81

مصنوعی بارش برسانے کی تیاریاں مکمل، لاہوریوں کو سموگ سے بچانے پر 10 کروڑ خرچہ آئے گا

تجرباتی طور پر شہر میں طیارے یا غباروں کے ذریعے بارش برسائی جائے گی۔ ڈرائی آئس میں نمک اور پانی ڈال کر مصنوعی بادل بنانے اور انہیں برسانے کے لیے پنجاب یونیورسٹی کے پروفیسر منور صابر کام کررہے ہیں اور اس حوالے سے خانس پور میں مصنوعی بارش کا کامیاب تجربہ کرلیا گیا ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ مصنوعی بارش ایک مہنگا پراجیکٹ ہے اوریہ کام ان علاقوں میں ہوتا ہے جہاں پورا سال بارش نہیں ہوتی ہے۔پانی بھر لیں، کپڑے دھولیں، استری بھی کرلیں،آگے بجلی نہیں ملے گی

لاہور کی ڈیڑھ کروڑ سے زائد آبادی  کو اگر 10کروڑ روپے کی لاگت سے اسموگ جیسی آفت سے  بچایا جاسکتا ہے تو یہ کوئی مہنگا سودا نہیں۔  مصنوعی بارش متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب جیسے خشک آب وہوا ممالک میں عام ہے۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں