37

میشا شفیع کی والدہ نے بیٹی کو ہراساں کرنے کے الزامات کو درست قرار دے دیا

 گلوکارہ میشا شفیع کی والدہ صبا حمید نےمیشا شفیع کو ہراساں کرنے کے الزامات کو درست قرار دیتے ہوئے  کہا کہ انہیں یقین ہے کہ انکی بیٹی جھوٹ نہیں بولتی۔

 تفصیلات کے مطابق ایڈیشن سیشن جج اخلاق احمد نے میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوے پر سماعت کی، گلوکارہ کی والدہ ادکارہ صبا حمید اپنے بیان پر جرح کےلیے عدالت پیش ہوئیں اور علی ظفر کے وکلا کے سوال پر صبا حمید نے بتایا کہ جب میشا شفیع کو ہراساں کیا گیا تو وہ موقع پر موجود  تو نہیں تھیں لیکن  مجھے یقین ہے کہ میری بیٹی میشا جھوٹ نہیں بولتی۔

 جرح کے دوران علی ظفر کے وکیل نے صبا حمید کے بیٹے فارث شفیع کا ریپ سانگ کمرہ عدالت میں چلا دیا اور کہا کہ آپ کے بیٹے نے گانے میں خواتین کے متعلق نازیبا الفاظ بولے، پوری دنیا میں ریپ کے گانوں میں یہ طریقہ استعمال ہوتا ہے۔ جس پر ادکارہ نے اعتراض کیا اور کہا کہ انہیں بیٹے کے کام پر فخر ہے کسی کے کام سے اس کے کردار کو نہیں پہنچانا جاسکتا۔ صبا حمید نے کہا کہ وہ ڈراموں میں مختلف کردار کرتی ہیں لیکن اس کا حقیقت سے تعلق نہیں ہوتا۔

عدالت نے ہتک عزت کے دعوے میں آئندہ سماعت پر علی ظفر کے وکلا کو صبا حمید کے بیان پر جرح مکمل کرنے کی ہدایت کردی، جب کہ کیس کی کارروائی 5 نومبر تک ملتوی کردی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں