181

میچ نہ جتوانے کا افسوس، رن آئوٹ ہونیوالے فخر زمان کا موقف بھی آگیا

فخر زمان نے کہا کہ مجھے میچ نہ جتوانے کا افسوس ہے۔ پوری کوشش کی کہ آخر تک جاؤں ، ایک سائیڈ پر بائونڈری چھوٹی تھی میں اس ہی کو ٹارگٹ کیا اس لئے اس اننگز کو اپنی زندگی کی بہترین اننگز نہیں کہہ سکتا۔

 میں نے پوری کوشش کی اور آخر تک فائٹ کیا۔اپنی غلطی سے رن آئوٹ ہوا ۔ پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ بدقسمت رہے کہ اچھا آغاز نہیں مل سکا، یہ میری ذمہ داری تھی کہ گیند پر نظر رکھتا کہ گیند کدھر آرہی ہے میں حارث رئوف کو دیکھ رہا تھا، قوانین کے حوالے سے جو باتیں ہیں وہ میچ ریفری دیکھیں گے۔ 

فخر زمان نے کہا کہ اگرکوئی بیٹسمین ساتھ ہوتا تو ہدف آسان ہوجاتا۔ وانڈررز میں عام طور پر سنچری بنانا آسان نہیں ہوتا لیکن فخر زمان نے اس گرائونڈ پر سب سے بڑی ون ڈے اننگز کھیلی۔ اس سے قبل ہرشل گبز نے آسٹریلیا کے خلاف 175رنز بنائے تھے۔

 فخر زمان نے اس گرائونڈ پر پاکستان کی پاکستان کی جانب سے پہلی سنچری بنائی۔ یہ جنوبی افریقا کے خلاف کسی بھی پاکستانی کی سب سے بڑی اننگز ہے۔ فخر زمان نے رن چیز میں سب سے بڑی انفرادی اننگز کھیل لی فخر زمان سے قبل سب سے بڑی انفرادی اننگز 185 رنز بناکر شین واٹسن نے کھیلی تھی۔ پاکستانی کپتان بابر اعظم نے کہا کہ میں نے اس سے اچھی ون ڈے اننگز نہیں دیکھی جب تک فخر موجود تھا مجھے یقین تھا کہ ہم جیت جائیں گے لیکن بدقسمتی سے وہ اکیلے یہ پہاڑ سر نہیں کرسکتا تھا دوسرے بیٹسمینوں کو بھی ان کا ساتھ دینا چاہیے تھا۔ جنوبی افریقا کے کپتان باووما نے کپتان کی حیثیت سے پہلی جیت حاصل کی۔ انہوں نے کہا کہ جیت کر خوشی ہے کہ سیریز میں واپس آگئے ،فخرزمان نے ناقابل یقین اننگز کھیلی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں