85

ولی عہد کا گرین سعودیہ اور مشرقِ وسطیٰ کے اقدامات کا اعلان

سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان نے اتوار کو اپنے نئے ماحولیاتی اقدامات پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے خطے کے رہنماؤں کے ساتھ ٹیلیفونک رابطے کیے ہیں۔
عرب نیوز کے مطابق سعودی ولی عہد نے سنیچر کو گرین سعودی اور گرین مشرق وسطیٰ اقدامات کا اعلان کیا تھا جس میں خطے میں کاربن کے اخراج کو 60 فیصد تک کم کرنے اور 50 بلین درخت لگانے سمیت کئی پروگرام شامل ہیں۔کویت کے امیر شیخ نواف الاحمد الصباح کے ساتھ اپنی ٹیلیفونک گفتگو میں ولی عہد نے تیل کی پیداوار بڑھانے، سمندری و ساحلی ماحول کو بہتر بنانے اور قدرتی ذخائر بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا۔
بحرین کے کنگ حماد کے ساتھ گفتگو میں دونوں رہنماؤں نے ان طریقوں پر غور کیا جس کے ذریعے اقدامات خطے کے معاشی اور سماجی مسائل اور عالمی ماحولیاتی صورتحال کو اس طرح اجاگر کرتے ہیں کہ خطے کے استحکام اور لوگوں کی زندگیوں کے معیار کو بہتر بنایا جا سکے۔
سنیچر کو شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا تھا کہ ’ہم گرین سعودی اینیشیٹیو سے سبزے میں اضافہ کریں گے جس سے ’کاربن‘ کے اخراج پر قابو پاتے ہوئے ماحول کو بہتر بنایا جاسکے گا اور کرہ ارض پر اس کے مفید اثرات مرتب ہوں گے ساتھ  ہی سمندری حیات کا بھی تحفظ ہو گا۔
شہزادہ محمد بن سلمان نے مزید کہا کہ’مہم کے دوران آئندہ چند برسوں میں مملکت کے مختلف علاقوں میں 10 ارب درخت لگا ئے جائیں گے جس سے تقریبا 40 ہیکٹر اراضی دوبارہ سرسبز ہو سکے گی یعنی سبزہ زاروں میں 12 گنا اضافہ ہو گا جوعالمی اقدام کا 4 فیصد ہدف مکمل ہوتا ہے۔
سعودی عرب شجر کاری کے حوالے سے عالمی سطح پر چار فیصد سے زیادہ کی نمائندگی کرے گا جبکہ دنیا میں ایک کھرب درخت لگانے کے عالمی ہدف کا ایک فیصد حصہ سعودی عرب حاصل کرے گا۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں