144

ووٹرز گھروں سے نکلیں ، ڈسکہ میں مساجد سے اعلانات

این اے 75ڈسکہ میں ضمنی انتخاب کا دنگل جاری ہے ، ووٹرز کو گھروں سے نکالنے کیلئے مساجد سے اعلانات کئے گئے ۔ 

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق این اے 75 ڈسکہ کی مساجد سے اعلانات کئے جاتے رہے جن میں ووٹرز کو گھروں سے نکلنے کا کہا جاتا رہا ۔ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ (ن) کی امیدوار نوشین افتخار اور پاکستان تحریک انصاف کے اسجد علی ملہی کے مابین کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے ۔

علی اسجدملہی نے گورنمنٹ گرلزکالج ڈسکہ کے پولنگ سٹیشن کادورہ کیا، اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے علی اسجد ملہی کاکہناتھا کہ الیکشن میں کئے گئے انتظامات سے مطمئن ہیں،پہلے بھی پی ٹی آئی جیتی تھی اب بھی جیتے گی،ان کاکہناتھا کہ پی ٹی آئی آج بھاری اکثریت سے جیتے گی،شام کوجوبھی رزلٹ ہواوہ ہمیں منظورہوگا،انہوں نے کہاکہ ن لیگ کے دھاندلی کے الزامات ڈرامہ ہے۔

ادھر مسلم لیگ ن کی امیدوارنوشین افتخار نے ریٹرننگ افسر کو ایک اور خط لکھ دیا۔نوشین افتخار نے اپنے خط میں کہاہے کہ کچھ پریزائیڈنگ افسران کی ساکھ پر شکوک وشبہات ہیں ،خدشہ ہے وہ پریزائیڈنگ افسران فارم 45 میں ردوبدل کرسکتے ہیں ،نوشین افتخارکاکہناہے کہ خدشہ ہے وہ پریرائیڈنگ افسران نتائج تبدیل کرسکتے ہیں ،الیکشن کمیشن ان پریزائیڈنگ افسران کی سخت مانیٹرنگ کرے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں