86

پاکستان میں 50 سال کی عمر کے افراد کی کورونا ویکسینیشن کا عمل اپریل سے شروع ہوجائے گا

تفصیلات کے مطابق پاکستان چین سے مزید 70 لاکھ کرونا ویکسین ڈوز خرید رہا ہے جو ملک میں 50 سال کی عمر کے افراد کی ویکسینیشن کے لئے استعمال کئے جائیں گے۔ویکسینیشن کا عمل اپریل سے شروع ہوجائے گا۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا ہے کہ 70 لاکھ کورونا ویکسین کی ڈوز اپریل میں پاکستان پہنچے گی۔ اپریل کے دوسرے ہفتے سے پچاس سال سے زائد عمر کے افراد کی ویکسین کا عمل شروع کر دیا جائے گا۔

وفاقی وزیر نےمزید بتایا کہ پاکستان نے چین سے سائنو فارم اور کین سینو ویکیسن خریدی ہے۔ پہلے خریدی گئی ویکیسن کی دو کھیپ رواں ماہ کے آخر تک پاکستان پہنچیں گی جبکہ رواں ماہ 10 لاکھ سائنو فارم ویکسین کی ڈوز آئیں گی۔ پاکستان نے 60 ہزار کین سائینو ویکیسن بھی خریدی ہے۔ یورپ کی اپنی مینوفیکچرنگ وہان کی عوام کے لئے پوری نہیں ہو رہی ہے۔ جس کی وجہ سے بھارت پر دباؤ بڑھنے کی وجہ سے ایشیائی ممالک کو دی جانے والی سپلائی متاثر ہو سکتی ہے۔

انہوں نے مزید انکشاف کیا کہ قبل ازیں گزشتہ سال گاوی نے پاکستان کو مارچ میں ایک کروڑ ستر لاکھ ویکسین کی خوراکیں فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن بھارت نے تمام ایشیائی ممالک کو ویکسین برآمد کرنے کا عمل روک دیا ہے۔ پاکستان کو بھارت کی جانب سے ملنے والی ویکسین جون تک ملتوی کر دی گئی ہے۔

اسد عمر کا کہنا ہے کہ اپریل میں ملنے والی 70 لاکھ خوراکوں میں سے چالیس لاکھ تیار خوراکیں ہیں اور لوگوں کو اس کے شاٹ لگائے جائیں گےجبکہ 30 لاکھ خوراکیں خام مال کی صورت میں پاکستان کو ملیں گی۔ پیکنگ میں ملنے والی یہ خام مال ویکسین قومی ادارہ صحت کو دی جائے گی۔

انہوں نے کین سائینو ویکسین کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ 60 ہزار کین سائینو ویکسین سنگل شاٹ ویکسین ہوں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں