26

پشاور:پولیس حراست میں طالب علم کی خودکشی کا معاملہ، لواحقین کا احتجاج

پشاور میں 15 سالہ طالب علم کے حوالات میں خود کشی کرنے کے معاملے پر وزیراعلی نے نوٹس لے لیا ہے، تھانے کے تمام افسران کے خلاف مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے۔بررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق  وزیراعلی خیبرپختونخوا  محمود خان نے پشاو ر کے تھانہ غربی میں پیش آنے والے افسوس ناک واقعہ کا نوٹس لے لیا ہے جس میں ساتویں جماعت کے طالب علم شاہ زیب نے پولیس حوالات میں مبینہ طور پر خود کشی کرلی ہے۔پولیس کے مطابق شاہ زیب کو بازارمیں لڑائی جھگڑا کرنے پر  حراست میں لیا گیا تھا اوراسے تفتیش کی غرض سے تھانے کے حوالات میں  رکھا گیا تھا جہاں اس نے مبینہ طور پر خود کو پھانسی دیدی ہے۔

وزیراعلی نے واقعے کا علم ہوتے ہیں فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا ہے جس کے بعد ایس ایچ او سمیت  تھانے کے پورے عملے کو نہ صرف معطل کردیا گیا ہے بلکہ گرفتار کرکے باقاعدہ طور پر دفعہ 302 کےتحت  مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکے نے خود کشی کی ہے اس کا ثبوت تھانے میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے ہیں۔

واضح رہے حوالات میں پراسرار طور پر لڑکے کی ہلاکت کا علم ہوتے ہی اس کے لواحقین اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد تھانے پہنچ گئی اور شدید احتجاج کیا، اس موقع پر شاہ زیب کے والد کا کہنا تھا کہ میرے بچے کو پولیس نے تشدد کرکے قتل کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں