18

پیپلزپارٹی بجٹ کو مسترد کر دے گی، شیری رحمان کا بڑا اعلان

پاکستان پیپلزپارٹی کی نائب صدر اور سینیٹر شیری رحمان نے بجٹ 22-2021 کو مسترد کرنے کا اعلان کر دیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ تباہی سرکار اب اپنی نااہلی اور بدترین گورننس کو چھپانے کے لئے مہنگائی، بے روزگاری اور غربت کا ذمہ دار آئی ایم ایف کو ٹھہرا رہی ہے۔آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے پر پارلیمانی نگرانی کو کیوں نظرانداز کیا گیا؟ 90 دن میں نیا پاکستان بنانے والوں کو 1000 دن ہو گئے ہیں، کہاں ہے نیا پاکستان۔

نائب صدر پاکستان پیپلزپارٹی نے کہا کہ نااہل سرکار اب بجٹ اجلاس میں مشکوک اعداد وہ شمار پیش کریں گی، اہم اعدادوشمار کو چھپائیں گے اور پچھلی حکومتوں کو اپنی نااہلی کا ذمہ دار ٹھہرائے گی جبکہ اربوں روپے مالیت کا بلاواسطہ ٹیکس ایک بار پھر غریب عوام پر عائد کیا جائے گا۔ پیپلز پارٹی اس عوام دشمن بجٹ کو مسترد کردے گی۔

واضح رہے کہ وفاق کی جانب سے 11 جون کو بجٹ پیش کیا جا رہا ہے ، وفاقی حکومت نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے اعداد مکمل ہیں اور بجٹ بغیر کسی رکاوٹ کے پاس ہو جائے گا ۔ دوسری جانب اپوزیشن کی جانب سے بجٹ کو پاس نہ کرنے کیلئے مکمل زور آزمائی کی جا رہی ہے ۔ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری گزشتہ دنوں ایک پریس کانفرنس میں بجٹ روکنے کیلئے اپنے ارکان قومی اسمبلی قائد حزب اختلاف  شہباز شریف کے حوالے کرنے کا اعلان کر چکے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں