120

کراچی میں خاتون کی خودکشی کا معاملہ ، گرفتار ہونے والے چار ملزمان نے دوران تفتیش تہلکہ خیز اعتراف کر لیا

 کراچی کے علاقے شادمان ٹاون میں خاتون خودکشی کیس میں زیر حراست چاروں ملزمان نے خاتون کو ہراساں کرنے کا اعتراف کرلیا۔

نجی ٹی وی 24نیوز کے مطابق ایس ایس پی سینٹرل غلام مرتضیٰ تبسم نے کہا کہ گرفتار ملزمان میں مرکزی ملزم وقاص بھی شامل ہے ، چاروں ملزموں نے خاتون کوہراساں کرنے کا اعتراف بھی کرلیا ہے ، ملزم وقاص اور خاتون میں عرصہ سے تعلقات تھے ، جس کی ملزمان نے ویڈیو بنائی تھی اور اس کے ذریعے وہ خاتون کو بلیک میل کرتے تھے۔

کراچی پولیس کو شادمان ٹاون کے رہائشی شخص نے 8اپریل کو درخوست دی جس میں کہا گیا کہ اس کی اہلیہ کو کچھ نا معلوم افراد نے بلیک میلنگ کے ذریعے خودکشی پر مجبور کیا ، جس پر پولیس نے تحقیقات کیں اور متوفی خاتون کو دھمکیاں اور بلیک میلنگ کے ذریعے خود کشی کرنے پر مجبور کرنے کی تصدیق کی۔خاتون نے خودکشی سے قبل اپنی بہن کو وائس میسج بھیجا جس میں اس نے کہا کہ اسے بلیک میلرز کی جانب سے فون کالز کے ذریعے اپنے مکروہ عزائم کی تکمیل کیلئے بلا رہے ہیں۔ 

پولیس ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ متوفی خاتون نے پنکھے سے پھندا لیکر خود کشی کی اور اپنی موت سے چند لمحات قبل اپنی بہن کو بھیجے گئے وائس نوٹ میں کہا کہ مجھے ملزموں سے ملنے کیلئے دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔ وائس نوٹ کے مطابق متوفی خاتون نے کہا کہ اسے جعلی نکاح کے ذریعے پھنسایا گیا اور پھر اس کی ویڈیوز بنائی گئیں جس کے بعد ان ویڈیوز کو شیئر کرنے کی دھمکیوں کے ذریعے بلیک میل کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں