201

کووِڈ ویکسین کی قلت ہونے پراپوزیشن کی حکومت پر تنقید

ملک میں کووِڈ 19 ویکسین کی قلت کی بڑھتی ہوئی شکایات کے پیشِ نظر مسلم لیگ (ن) نے ویکسین کی خریداری میں تاخیر پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

حکومت کا دعویٰ ہے کہ ویکیسن کی 10 لاکھ خوراکیں دستیاب ہیں اور مزید آئندہ چند روز میں آنے والی ہیں۔

کراچی، لاہور، اسلام آباد اور راولپنڈی میں بڑے ویکسینیشن مراکز نے یا تو ویکسینیشن روک دی ہے یا سست کردی ہے جس کی وجہ سے یومیہ ویکسینیشن کی تعداد جو رواں ماہ کے آغاز میں 4 لاکھ تک جا پہنچی تھی اب 40 فیصد کم ہوگئی ہے۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے آئندہ ہفتے ویکسین سپلائیز کی ٹائم لائن شیئر کی اور دعویٰ کیا کہ سسٹم پر آنے والا دباؤ اور تقسیم کے مسائل پیر یا منگل تک حل ہوجائیں گے اس کے علاوہ پاکستان میں ویکسین کی 10 لاکھ خوراکیں اب بھی دستیاب ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے حکومت کو کووِڈ ویکسین کی عدم دستیابی پر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ وزیراعظم عمران خان کی مجرمانہ غفلت ہے کہ بروقت ویکسین نہں خریدی گئی۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ ‘آج پاکستانی عوام وزیراعظم کی نااہلی کی وجہ سے بھگت رہے ہیں، 12 کھرب روپے کا کورونا پیکج بھی عمران مافیا کی جیب میں گیا اور اب ہم ویکسین سے متعلق بھی وہی مسائل سن رہے ہیں’۔

بعدازاں ڈاکٹر فیصل سلطان نے میڈیا کو بتایا کہ ملک میں کووِڈ 19 ویکسین کی 10 لاکھ خوراکیں دستیاب ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 15 لاکھ 50 ہزار خوراکیں 20 جون 25 لاکھ خوراکیں 22 جون اور مزید 20 سے 30 لاکھ ویکسینز 23 سے 30 جون کے درمیان آجائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں