103

کوویڈ ویکسین دینے کے بہانے لڑکی کو گینگ ریپ کا نشانہ بنا دیاگیا

 بھارت میں کورونا انتہائی خوفناک صورتحال اختیار کر چکا ہے جہاں روزانہ کی بنیاد پر ساڑھے تین لاکھ سے زائد کیسز رپورٹ ہو رہے ہیں وہیں کورونا ویکسین فراہم کرنے کے نام پر دھوکہ دہی کے کیسز بھی سامنے آرہے ہیں، ایسا ہی ایک کیس ریاست بہار کے شہر پٹنا میں سامنے آیا جہاں جواں سالہ لڑکی کو کورونا ویکسین دینے کے بہانے دو افرادنے گینگ ریپ کا نشانہ بنا دیا۔

ڈیلی سٹار کے مطابق صحت مرکز میں کام کرنے والے دو افراد کی شناخت روکی اور مونٹو کے نام سے ہوئی ، ملزمان نے لڑکی کو دھوکہ دیا کہ وہ اسے کورونا کی ویکسین لگائیں گے ، ملزمان لڑکی کو ایک سنسان گھر میں لے گئے اور ہاتھ پاؤں باندھ  کر زیادتی کانشانہ بنا دیا۔

ایک تفتیشی افسر نے میڈیا کو بتایا کہ متاثرہ لڑکی خود کو آزاد کرانے میں کامیاب ہو گئی اور گھر پہنچی ، جس کے بعد اہلخانہ لڑکی کے ساتھ پولیس کے پاس پہنچے ، چونکہ بچی کو ملزمان کا علم تھا لہذا ان کو گھر پر چھاپہ مار کر گرفتار کرلیا گیا۔تفتیشی افسر کے مطابق لڑکی کی عمر کا علم نہ ہو سکا تاہم اس کی عمر 18سے کم لگتی ہے ۔

واضح رہے کہ بھارت میں کورونا وائرس سے اب تک دو لاکھ سے زائد اموات ہو چکی ہیں جبکہ روزانہ ساڑھے تین لاکھ سے زائد کیسز رپورٹ ہورہے ہیں ۔ بھارت میں ہیلتھ سسٹم بری طرح بیٹھ چکا ہے ، ہسپتالوں میں کورونا مریضوں کو نہیں لیا جا رہا ، ہزاروں کی تعداد میں مریض ہسپتالوں کے باہر سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر پڑے ہیں جبکہ ہسپتالوں میں آکسیجن کی شدید قلت ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں