61

ہوٹلوں کے مالک نے کورونا سے صحتیاب ہونے کے بعد خود کشی کرلی

امریکہ سے تعلق رکھنے والی مشہور ریسٹورنٹ چین ٹیکساس روڈ ہاؤس کے بانی و چیف ایگزیکٹو 65 سالہ کینٹ ٹیلر نے خود کشی کرلی۔

کینٹ ٹیلر نے جمعرات کو کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والی پیچیدگیوں کے سبب خود کشی کی ہے۔ وہ کورونا سے تو صحتیاب ہوگئے تھے لیکن اس کے باوجود انہیں طبی عوارض لاحق ہوگئے تھے جن میں کانوں کی بیماری بھی شامل تھی، انہیں ہر وقت گھنٹیاں سنائی دیتی تھیں جس سے وہ بہت پریشانی میں مبتلا تھے۔

کینٹ ٹیلر نے 1993 میں ٹیکساس روڈ ہاؤس نامی ریسٹورنٹ  کی بنیاد رکھی تھی  جس کی آج 630 برانچز ہیں۔ ٹیکساس روڈ ہاؤس کی برانچز امریکہ کی 49 ریاستوں اور دنیا کے 10 ملکوں میں پھیلی ہوئی ہیں۔ انہیں اپنی فیاضی کی وجہ سے بھی جانا جاتا تھا۔ انہوں نے گزشتہ دنوں کورونا کے خلاف لڑنے والے فرنٹ لائن ورکرز کیلئے ایک ملین ڈالر کے عطیات دیے تھے۔دی سن اخبار کے مطابق کینٹ ٹیلر کی دولت کا تخمینہ 600 ملین ڈالر (93 ارب 60 کروڑ روپے) لگایا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں